Urdu Sex Stories ہاٹ سیکس سٹوری باپ بیٹی کا خاوند بنا

Discussion in 'Erotic Incest Stories' started by عاشقة المحارم, 27/4/16.

  1. عاشقة المحارم

    عاشقة المحارم عضو متفاعل

    Messages:
    130
    Likes Received:
    68
    Trophy Points:
    28
    Gender:
    Female
    Location:
    دبي , الإمارات
    ہاٹ سیکس سٹوری بہت زبردت لیکر آیا ہوں مجھے تلاش رہتی ایسی کہانیوں کو جو عام روٹین سے ہٹ کے ہوں اور ان کو پڑھ کے آپ دوست زیادہ انجوائے کریں ایسی ہی ایک کہانی پچھلے دنوں مجھے کسی نے دی ہے کہ آپ ہاٹ سیکس سٹوری فورم میں اکثر کہانیاں پوسٹ کرتے رہتے ہیں تو اس کو بھی وہاں پوسٹ کریں اس کو کہانی بھجوانی آتی نہیں یا الجھن محسوس ہوتی ہے تو ا سنے مجھے یہ دی ہے بلکہ سنائی ہے جس کو میں اپنے دوستوں کی خدمت میں پیش کرنے جا رہا ہوں
    اس میں پاکستانی معاشرے میں ہونے والے اس طرح کے سیکس کی بھی ایک جھلک دیکھی جا سکتی ہے یورپ کے علاوہ بھی انڈیا پاکستانی إٰں چند بار ایسا ہوتا ہے کہ حرمت کے رشتوں میں بھی سیکس کیا جاتا ہےاور کئی بار تو بھائی بہن کو باپ بیٹٰ کو ذحمل کرنے کا سبب بنتے ہیں اور کئی بار سوتیلی ماں کے ہاتھوں سوتیلا بیٹا سیکس انجوائے کرتا ہے اور پھر سوتیلی ماں بھی حاملہ ہو جاتی ہے کیا سین ہوتا ہوگا جب بیک وقت اس صورت مٰں ہونے والا بچہ آپکا بیٹا بھی ہو اور بیک وقت بھائی بھی رشتے میں بن جائے تو اب اس طرح کے سیکسی واقعات ہر جگہ ہونے لگے ہیں
    اس کا حل کیا ہے یہ ہمارا موضوع نہیں ہے ہم اس کہانی کو بنا فریق بنے من و عن بس پیش کرنے جا رہے ہیں کہ ایسا بھی ہوتا ہے امید ہے سیکس لوور کو اس طرح کی کہانیاں بہت اچھی لگتی ہٰں اور اب آپ ا سکہنای کے جزیات سے لطف لیں کہ کیا کیا ہو رہا ہے ہمارے معاشرے میں اس کہانی میں ایک رنڈوا باپ اپنی جوان سالہ بیٹی کے ساتھ جسمانی تعلقات قائم کرتا ہے اور پھر اس کو حاملہ بھی کر دیتا ہے نتیجہ کیا ہوا جانیئے ا سسیکسی کہانی کو پڑھ کے میں آپ کو جو آج دیسی سکس کہانی سنا رہا ہوں وہ یہ ہے کے کس طرح ایک باپ اپنی بیٹی کا خاوند بن گیا
    میں آپکو یہ بات پوری تفصیل سے بتا تی ہوں ایک آدمی تھا جو نہ کسی کے گھر جاتا تھا اور نہ ہی کسی کو اپنے گھر آنے دیتا تھا ایک اس آدمی کے ٣ بچے تھے ایک بیٹی اور دو بیٹے تھے ایک بار ہوا یوں کہ ایک دن اس آدمی کی بیوی مرگئی پورے محلے میں سے کوئی بھی نہیں آیا تھا چند ایک لوگ تو تھے لیکن محلے کے لوگ ا سآدمی کو نا جانے کیوں ناپسند کیوں کرتے تھے ایک بار بس اس کی بدنای ہوئی تھی جب وہ اپنی بیوی کو دفنا کر آیا تو اسکے سارے بچے رو رہے تھے
    وہ اپنے بچیوں کو سنبھانے لگا وہ گھر کا سارا کام کرتا تھا وہ بہت پریشان رہتا تھا ایک دن اس نے اپنی بیٹی کو دیکھا وہ انیس سال کی تھی اسکی نیت خراب ہو گئی یہ اپنی بیٹی کو اپنی ہوس سے دیکھتا تھا وہ روز سوچتا تھا کہ میں کس طرح اسکو چودو وہ ہر رات یہ سوچتا اور سو جاتا وہ ہر روز اپنی بیٹی کو اپنی ہوس کی نظروں سے چودتا تھاایک دن وہ شراب پی کر آیا اور اپنی بیٹی کے پاس گیا وہ بیچاری سو رہی تھی اس کی قمیض پھٹی ہوئی تھی
    اس نے اپنی بیٹی کو چودنے کا سوچ لیا تھا اس نے اس کو کسنگ کرنا شروع کر دیا اور کسنگ کرتے کرتے اس نے اسکی قمیض کو اتار دیا اسکے دودھ کو چوسنے لگا اور اسکی جوانی کو چوم لیا اور اسکو پورے جسم کو چومتا رہا پھر اس نے اس کی چوت میں اپنا لنڈ ڈالا اور اسکو کھود تا رہا اسکی چوت میں اپنا لنڈ مارتا رہا زور زور سے اندر باہر کرتا رہا یہ پوری رات اسکو چودتا رہا وہ اس کے ہونٹوں کو کسنگ کر تا رہا اور اسکے دودھ کو اپنے ہونٹوں سے دباتا رہا اور اسکی چوت میں اپنا لنڈ اندر باہر کر تا رہا اور وو رو رہی تھی لیکن چپ رہی
    اور اسکالنڈ بہت پھنس پھنس کے جا رہا تھاکیوں کے اسکی چوت بہت چھوٹی تھی ارور تازہ چدائی ہو رہی تھی اور ی بھی ایک حقیقت تھی کہ لنڈ برا تھا اور اس لڑکی کوبہت مزہ مل رہاتھا پھر اس نے اندر باہرکرنا شروع کیا تو وو چلانے لگی پھر اسکی چوت سے خون آنےلگا اور پاپی باپ بیٹی کی چوت کے اندر فارغ ہو گیا پھر اس کی چوت سے لن نکال کے خون صاف کیا اور اس کو منت کرنے لگا پلیز کسی کو مت بتاناپھر اپنی زبان سے اسکی چوت چوسنے لگا ظاہر ہے اک جوان لڑکی تھی مزہ تو ملنا تھاے بہت مزہ آ رہاتھا اور اسکا رونا بھی بندہ ہوگیا تھا
    وو چپ ہوگی تھی پوری رات یہی ہوا وہ ہر رات یہی کرتا تھا اسکو بہت درد ہو تھا تھا وہ روٹی رہتیرہتی تھی لیکن انجوائے بھی کرتی تھی مگر اس باپ کو اس پہ ترس نہیں آتا تھا وہ ہر رات اسکی جوانی کو خراب کر تا تھا بہت عرصے سے وہ چودے جا رہا تھا پھر اس کی بیٹی پ لوگوں کو شک ہو گیا کہ وہ باپ سے چدا کے بچے بنا رہی ہے لوگوں نے جب آواز اٹھانے کا سوچا تب تک یہ باپ بیٹی دور کسی اور مقام پہ جا کے رہنے لگی وہ باپ اب بھی اپنی بیٹی کی پھدی مارتا ہے
    اور بچے بھی ہو چکے ہیں ا ا س نے بیٹی کو بیوی بنا لیا ہے اور اب بیٹی بھی چپ ہے اس کا کہنا ہے کہ اب تو مجھے بھی اعتراض نہیں ہے مزہ بھی ملتا ہے باپ کو میری شادی کی اور نا اپنی شادی کی فکر ہے دونوں کا کام ہوا جا رہا ہے بس کسی کو علم نا ہو کیا ہم باپ بیٹی ہیں اور دونوں ابھی تک مزیدار سیکس انجوائے کیئے جا رہے ہیں شروع شروع میں بیٹی کو دشواری اور شرمندگی کا سامنا تھا لیکن اب وہ بھی چدائی کی عادی ہو چکی ہے باپ کما کے لاتا ہے بیٹی نما بیوی کی رات کو چوت لیتا ہے مزیدار چدائی لگائی جا رہی ہے بچے بھی سکول جا رہے ہیں کسی کو کوئی خبر نہیں ہے بس خبر ملی ہے تو اردو ہاٹ سیکس سٹوری والے ان دوستوں کو جو ا سکو پڑھ رہے ہیں
     
Loading...

Share This Page

  • مرحباً بكم فى محارم عربي !

    موقع محارم عربي هو أحد مجموعة مواقع شبكة Arabian.Sex للمواقع الجنسية العربية والأجنبية كما ندعوكم إلي مشاهدة مواقع أخري جنسية صديقة لنا لإكمال متعتكم وتلبية إحتياجاتكم الجنسية .

    سحاق
  • DISCLAIMER: The contents of these forums are intended to provide information only. Nothing in these forums is intended to replace competent professional advice and care. Opinions expressed here in are those of individual members writing in their private capacities only and do not necessarily reflect the views of the site owners and staff
    If you are the author or copyright holder of an image or story that has been uploaded without your consent please Contact Us to request its Removal
    Our Site Is Launched For (Sweden) Arabian Speaking Language