Urdu Sex Stories پاکستانی سیکس سٹوریز جوانی کا منہ زور گھوڑا

Discussion in 'Erotic Incest Stories' started by عاشقة المحارم, 27/4/16.

  1. عاشقة المحارم

    عاشقة المحارم عضو متفاعل

    Messages:
    130
    Likes Received:
    68
    Trophy Points:
    28
    Gender:
    Female
    Location:
    دبي , الإمارات
    Pakistani Sex Stories jab jawani muj sae control na ho sake
    ایک بار کا ذکر ہے میری خالہ جسکا نام رضیہ تھا وہ بہت سیکسی تھی اور خوبصورت بھی تھی اسکی عمر تقریباٌ بائیس سال تھی بالکل جوانی کی عمر سب سے چھوٹی خالہ تھی. سال تھی میں ایک دن خالہ گھر پہنچا انہوں نے دروازہ کھولا اُوووففف یار کیا لگ رہی تھی وہ وائٹ کلر کی شلوار قمیض پہنی ہوئی تھی. وہ بھی فٹنگ میں میں اندر گیا انہو ں نےمجھے بیٹھنے کوکہا
    وہ پانی لینے گئی میں گلاس پکڑنے لگا تبھی میرا ہاتھ انکے ہاتھ سے لگا .وہ مجھے اور میں انھیں دیکھنے لگ گیا انہوں نے کوئی ریکشن نہیں کیا میں نے پانی پیا وہ بولی کہ تم بیٹھو میں کچن سے ہوکر آتی ہو. یار جب وہ کچن کی طرف جارہی تھی تو پیچھے سے انکی گانڈ کیا لگ رہی تھی. میری تو نیت خراب ہونے لگی تھی دل کر رہا تھا کہ جاکر پکڑلو پیچھے سے
    پھر اچانک مجھے آنٹی کے گِرنے کی آواز آئی. میں جلدی سے کچن میں گیا تو دیکھا خالہ نیچے گِری ہوئی تھی میں نے انھیں اٹھایا ان سے چلا نہیں جارہا تھا میں نے پھر بھی کوشش کرکے انھیں اٹھایا اور انکے کمرے میں لےگیا انھیں بیڈ پر لیٹایا انکے پاؤں پر ٹیوب لگانے لگا
    میں انکے پاؤں پر ٹیوب لگا رہا تھا. انہوں نے اپنی آنکھیں بند کی ہوئی تھی انھیں کچھ سکون مل رہا تھا میری نیت تو پہلے ہی خراب تھی میں دھیرے سے انکے قریب گیا اور حیرانی کی بات یہ تھی کہ وہ کچھ کہہ بھی نہیں رہی تھی میں آگے بڑھا انکے ہونٹوں کو چوسنا اسٹارٹ ہوگیا وہ بھی مجھے کِس کرنے لگی
    کِس کرتے کرتے میںنے اسے بیڈ پر لیٹا دیا. اور اسے کِس کرتا رہا پھر اسکے بوبس کو دبانے لگا اسکی آوازیں نکلی پھر اسکی قمیض اتاردی کیا بوبس تھے یار اسکے بوبس کو زور زور سے دبانے لگا پھر اسکی شلوار اتاری اسے بیڈ پر لیٹا دیا اپنی پینٹ اتاری لنڈ نکالا اور اسکے منہ میں ڈال کر اسے چوپے لگوانے لگا
    اپنے لنڈ کو اسکے منہ کے اور اندر تک گھسانے لگا پھر اسکی چوت پر رکھا ایک جھٹکے سے اندر کر اپنی کمر کو زور زور سے آگے پیچھے کرنے لگا اسکی چیخیں نکلی. میں اسے پندرہ منٹ تک چودتا رہا پھر اسکی ایک ٹانگ اٹھائی اور لنڈ اسکی چوت میں ڈالا اور جھٹکے مارنے لگا وہ چیخیں مارنے لگی میں نے کہا کہ یہ ہوتا ہے سیکس پھر لنڈ نکالا اسکی چوت میں انگلی ڈال کر اندر باہر کرنے لگا اسکی آوازیں نکلی اُووف
    میں نے اسکی جوانی کو چودنا اور اسکے ساتھ زبردست انداز مین مست مزہ لے کر اسکی چائی لگانے کے لیئے اسکو فل مست ودنا اور مزہ لینا شروع کردیا تھا . آنٹی کی جوانی کی چدائی لگا کر میں اپنے لنڈ کی گرمی اور چوت کا مزہ لے رہا تھا اور میرا لنڈ اپنی ٹھرک مٹانے کے لیئے تیار ٹائٹ اسکو چود رہا تھا میری جوانی کی گرمی اور تیز ہو رہی تھی اور آنٹٰی کی سکسی آوازیں مجھے مست کر رہی تھی
    اور پھر میں سکس کرکے اسکی پھدی کے اور ہی فارغ ہو گیا جب اگلی بار اس کو چود رہا تھا تو کسی کی نظر پڑ گئی اور اس نے بات سب کو بتا دی تھی مجھے گھر سے بے غیرت کہہ کے نکال دیا گیا تھا . ایک تو میری ماں نہیں تھی دوسرا ابا نے اورلڑکی سے شادی کی ہوئی تھی میرا کوئی نہیں تھااور تھا میں نے اس کو قبول کر لیا
    جب میں نے چڑھتی جوانی میں محلے کی ایک لڑکی کو اس کی مرضی سے چودا تھا لیکن جب ہم پکڑے گئے تو وارننگ ملی تھی اب ابا نے کہا مزید وارنننگ نہیں نکل جاو اس نے کہا تھا کہ میں نے اس کو زبردستی چودا ہے اور لنڈ بھی اس کے منہ میں ڈالا اس وقت میرے والد نے میری سوتیلی ماں کے کہنے پر مجھے ہمیشہ کیلئے اپنے گھر سے نکال دیا تھا .اور پھر کتنے سال میں نے ایک فلمی پوسٹر لکھنے والے پینٹر کے ساتھ دن رات کام کیا
    استاد کی بیوی کو ماں کہتا تھا اور اس نے مجھے بیٹوں کی طرح رکھا اور اپنے گھر کے ایک کونے میں جگہ بھی دی استاد نے مرنے سے پہلے مجھے سب کچھ سکھا دیا تھا اور اب میں ایک فلم سٹوڈیو میں نئی ریلیزہونے والی فلموں کے اشتہاری پوسٹر لکھتا تھا اور قدرتی طور پر میں فلمی ایکٹریس کی تصویر زیادہ توجہ دیکر پیاری بناتا تھا
    وہ اداکارہ حقیقت میں بھی اتنی خوبصورت نہیں ہوتی تھی. جتنی خوبصورت میرا برش کر دیتا تھا اور اسی بنا پر فلمی اداکاراؤں میں میری اچھی پہچان اور عزت تھی وہ مجھے اپنا ساتھی ورکر سمجھتی تھیں ایک فلمی اداکارہ تھی جب وہ نئی نئی آئی تھی تو اس کے راج تھے .فلم نگری میں اس کا لمبا قد سمارٹ بدن چھاتیاں بڑی متناسب اور سڈول سنہری ریشمی بال
    اور جب باتیں کرتیں تو دل کرتا بندہ سنتا رہے اور اس کو دیکھتا رہے میں جب بھی اس کے پاس سے گزرتا تھا میرا لنڈ کھڑا ہو جاتا اور دل کرتا کاش میں بھی اس کی چوت کا دیدار کر سکتا لیکن وہ ہر کسی کو چوت تو کیا لفٹ نہیں دیتی تھی اور بڑے نخرے تھے اس کے کئی ایک سیاستدان بہرحال اس کو چود چکے تھے ہمیں سٹوڈیو میں رہ کر اتنا پتہ تو چل ہی جاتا ہے
    پھر اس پر زوال آنا شروع ہو گیا اور کئی ایک نئی لڑکیوں نے اس کی مانگ کم کردی اب وہ پرانی فلمی اداکارہ کہلائی جانے لگی تھی اور اس کی فلمیں زیادہ ہٹ نہیں جا رہی تھی. ایک دن اتفاق سے ملاقات ہوئی تو کہنے لگی تم بہت پرانے ہو یہاں اور اچھے بھی ہو پلیز میری تصویر بناتے وقت خاص توجہ دیا کرو. اور میں نے مذاق میں کہ دیا آپ تو دل میں بستی ہیں اور ابھی بھی خوبصورت ہیں پریشان نہ ہوں
    اگلے دن شام کو اس نے مجھے بلوایا اور مجھ سے کہا آّج تمہاری بنی ہوئی اپنی تصویر میں نے دیکھی ہے تم نے کمال کر دیا اور مجھے پھر ماضی کی خوبصورتی یاد دلا دی .مانگو کیا مانگتے ہواور میں نے ڈرتے ڈرتے کہا ایک رات آپ کے ساتھ اس نے ایک لمحہ سوچا مسکرائی
    اور ہاں کہہ دی اگلے دن میں اس کے پاس پہنچ گیااگرچہ اب اس فلمی اداکارہ میں پہلے والی بات نہیں تھی لیکن کیا بتاؤں یہ اداکارائیں بوڑھی بھی ہو جائیں ان کی چوت اور بدن کا مزہ عام لڑکیوں سے کئی گنا زیادہ ہوتا ہے .وہ ایک پرانی شراب تھی جس کو میں گھٹا گھٹ پی گیا
    Pakistani Sex Stoies mae din raat ab larkyaan hee chodta rahta hoon
     
Loading...

Share This Page

  • مرحباً بكم فى محارم عربي !

    موقع محارم عربي هو أحد مجموعة مواقع شبكة Arabian.Sex للمواقع الجنسية العربية والأجنبية كما ندعوكم إلي مشاهدة مواقع أخري جنسية صديقة لنا لإكمال متعتكم وتلبية إحتياجاتكم الجنسية .

    سحاق
  • DISCLAIMER: The contents of these forums are intended to provide information only. Nothing in these forums is intended to replace competent professional advice and care. Opinions expressed here in are those of individual members writing in their private capacities only and do not necessarily reflect the views of the site owners and staff
    If you are the author or copyright holder of an image or story that has been uploaded without your consent please Contact Us to request its Removal
    Our Site Is Launched For (Sweden) Arabian Speaking Language