Urdu Sex Stories ہاٹ سیکس سٹوریز آپی کی چدائی پارٹ ٹو

Discussion in 'Erotic Incest Stories' started by عاشقة المحارم, 25/4/16.

  1. عاشقة المحارم

    عاشقة المحارم عضو متفاعل

    Messages:
    130
    Likes Received:
    68
    Trophy Points:
    28
    Gender:
    Female
    Location:
    دبي , الإمارات
    Hot Sex Stories bahan ki chudai dekhe kia hoa phir
    نائلہ کی جوانی تڑپ تڑپ کے اب لن مانگنے کے لیئے اوتاولی ہو چکی تھی اور اس کو ہر صورت سکون کے ساتھ اس کرد کی بانہوں کی ضرورت تھی اور وہ اس مرد کی اسیر ہو جانے کے لیئے بہت بے قرار ہو چکی تھی جوانی کے منہ زور گھوڑے کے آگے اب اس کا بس نہیں چل رہا تھا کیسے ا سکو روکے جوانی ایک دم سے آتی ہے اور اپنے ساتھ بہت کچھ بہا کے لے جاتی ہے
    اس کے ساتھ بھی اب ایسا ہی سین ہونے والا تھااس کی الہٹر جوانی کو انکل روندنے والا تھااور اپنی مرادنگی کی دھاک بٹھانے کو وہ بھی بہت بے قرار ہو چکا تھا یوں تو وہ کئی لڑکیون کے ساتھ سیکس کر چکا تھا لیکن اس کے خیال کے مطابق نائلہ کے ساتھ سہانی دوپر جو گرم ہونے کے باوجود بھی کسی سہاگ رات سے کم دکھائی نا دیتی تھی
    وہ میچور مرد تھا بڑی عمر کا اس کی عمر میں کچھ بڑی اورمحلہ کے رنگین سہانے سے واقف ایک دوست سے جب انکل خضر کی تعریف سنی تو نائلہ کا بھی انکل کو دیکھنے کا انداز اور خیال ہی بدل گیا جوانی کی ترنگ نے انکل سے دوستی اوآغوش کی خواہش کو جنم دیا
    کچھ جھجک بھی ہوئی تھی اور ڈر بھی لگا پرانکل کی اس جانداراور زندہ دلی دلی میں چھپی مزیدار باتوں اور اندازکے سامنے رہا نہ گیا انکل کے ہاں آمدورفت توپہلے سے بھی تھی، نگاہوں کی زبان سے دل کا پیغام پہنچایا یہ تواندازہ تھا کہ اس سیکسی خوبصورت پیشکش سے انکار کون بدنصیب کرے گا اور انکل کے ساتھ بات راز ہی میں رہنے کا سکون بھی تھا
    ابھی کالج نہیں چھوڑاتھا کہ نائلہ کی خضر انکل سے پہلی سیکسی سہانی ملاقات ہوئی چھت پر ہی ملاپ ہوا اور وہیں کلی سے پورا پھول بنی انکل نے بھی اس کے کنوار پن کی کچی تند دھاگےبڑے چاؤ سے توڑے اور کھولے لیکن ایک بات توپ بھی جانتے ہٰں کھلنے کے بعد سلتے نہیں پھر مزید اور لڑکی سےعورت کا روپ دیا
    مرد سے اپنے پہلے وصال کی پر کیف لذت نے نائلہ کو کافی دن مسرور اور شاداں رکھا جسم کے زیریں حصے سے اٹھتی درد کی میٹھی سی ٹیس بھی کچھ دن اس کو مزہ دیتی رہی اور چھت پرانکل کے ساتھ گزارے ان رنگین لمحات کی رنگینی کا احساس دلاتی رہی
    اس کی منہ زور جوانی کو بھی جیسے ایک بھرپور مرد کی تلاش تھی سلسلہ چل نکلا اور ملاقات بلکہ کئی ایک ملاقاتیں ہونے لگیں انکل کا دل بھی اس کی الہڑ اور بھرپور جوانی پر خوب آیا گرمیوں کی ایسی کئی دوپہریں انکل نے اس کے بدن کی گہرائی ناپنے اور اس کی جوانی کو آسودگی دینے کرنے پر صرف کیں
    پہلی سیکسی اور بھرپور ملاقات میں آشکار ہونے والے درد دور ہوئے تو نائلہ بھی اس کھیل کی ماہر ہکھلاڑی کی طرح ہوتی گئی برابرکا کھلاڑی ملا تو انکل بھی سب کو چھوڑ کر پوری توجہ اور زور اسی پر لگانے کرنے لگے اب تک وہ نائلہ کے جسم کا ہر سیکسی انگ اور اس کی ترنگ کو ناپ چکے تھے
    اور بدن کا ہر ایک انگ انگ کھول چکے تھے اور وپ مکمل عورت تھی ا ب وہ بھی نکھر کر ایک بھرپورجوان عورت کے روپ میں ڈھل چکی تھی اس کےصحتمند کسے ہوئے جوان لچکیلے بدن پرغضب ڈھاتی چھاتیوں بوبز کی اٹھان اور اس کی چونچیوں کی کشادگی دیکھنے والوں کے جسم کے کچھ حصوں میں خون کی گردش میں اور بھی تیز ی کردیتی تھی
    کافی مدت ہو چلا تھا روفی اب بڑا ہو گیا تھا اور سمجھنے لگا تھا نائلہ اب اس سے محتاط رہنے لگی تھی ویسے تووہ بدھو پن کی حد تک سادہ بھی تھا تھا پراس سے کافی مانوس بھی تھا اس کے گھر پر موجودگی میں وہ کم مکم ہی اوپر جاتی تھی یا پھر اس کی باہر دوستوں کے پاس نکلنے کا انتظار کرتی ابھی تک تو سارے معاملے کی واحد صرف ایک ہی راز دار تھی رازدار نورین تھی جو پیچھے گھر پر نظر رکھتی تھی کام کو سنبھالتی تھی شائد کہ کبھی اس کی باری بھی آئے تو نائلہ بھی اس کا اچھا ساتھ دیکر ا سکی کنواری چوت کھلنے میں مدد دے گی
    کچھ دنوں سےروفی کا معمول تھا کہ کالج سے واپسی پر اچھے اور کچھ نئے دوستوں کی طرف نکل جاتا آج بھی کھانے سے فارغ ہوتے ہی وہ شام تک وآپس لوٹنے کا کہہ کر جلدی باہر نکل گیا نائلہ کو اب اپنی بھابی کے سونے کا انتظار تھا اور نورین کے پیارے اشارےکا بھی انتطار تھا جانے کب سگنل ملے اور وہ چدائی لگوانے چلی جائے
    ہفتے میں آج کے دن انکل سے ملاقات اس کا معمول بنا ہوا تھا اور بھی تھا اور پھر وہ کل شام خضر انکل سے ملنے کی فرمائش بھی کرآئی تھی کیونکہ ا سکی چوت گرم ہو چلی تھی بھابی کے خراٹوں کی بلند آواز بلند ہوتے ہی نورین کا اشارہ پا کر وہ بھی چھت کی جانب بڑھی اور ا سکے قدم نا جانے کیون آج تھوڑے لرز رہے تھے جیسے کچھ انہونی ہونے جا رہی ہو
    روفی آج نائلہ کو موقع پہ ہی رنگے ہاتھوں پکڑنے کا ارادہ کر کے آیا تھا پاپی خضر انکل کو دیکھ کر روفی کو حیرت بھی ہوئی تھی اور افسوس بھی ہورہا تھا کہ اس کی آپی نے یہ کیا ظلم کیا ہے کاش کسی نوجونا لڑکے سے دوستی کر لیتی تو اس کی کم از کم شادی بھی اس کے ساتھ ہو سکتی تھی
    انکل کو دیکھ نائلہ کے چہرے پر کھیلتی مسکراہٹ بھی روفی کو بالکل زہر لگ رہی تھی آس پاس کا جائزہ لینے کے بعد خضر انکل خاموشی کے ساتھ دبے قدموں اس جانب بڑھنے لگے جہاں نائلہ بےصبری بے قراری سےان کی منتظر تھی ان کا لن لینے کی طلب گار تھی
    قریب پہنچتے ہی انکل نے اس کو اپنی بانہوں میں کھینچ لیا اور ان کے ہونٹ اس کے گرم رسیلے ہونٹوں کا رس پینے لگے اور ان کو تر کرنے لگے ان کے ہاتھوں کو اپنی آپی کی سیکسی گداز پشت پر ابھری بھری بھری گولائیوں میں پیوست ہوتے دیکھر روفی کا خون کھولنے لگا تھا لیکن وہ شش و پنج میں پڑتا گیا
    Hot Sex Stories meri aapi chudai ki papi chalo nikli to mae nae kia keya
     
Loading...

Share This Page

  • مرحباً بكم فى محارم عربي !

    موقع محارم عربي هو أحد مجموعة مواقع شبكة Arabian.Sex للمواقع الجنسية العربية والأجنبية كما ندعوكم إلي مشاهدة مواقع أخري جنسية صديقة لنا لإكمال متعتكم وتلبية إحتياجاتكم الجنسية .

    سحاق
  • DISCLAIMER: The contents of these forums are intended to provide information only. Nothing in these forums is intended to replace competent professional advice and care. Opinions expressed here in are those of individual members writing in their private capacities only and do not necessarily reflect the views of the site owners and staff
    If you are the author or copyright holder of an image or story that has been uploaded without your consent please Contact Us to request its Removal
    Our Site Is Launched For (Sweden) Arabian Speaking Language