Urdu Sex Stories پاکستانی سیکس سٹوریز اسٹائل بدلے

Discussion in 'Erotic Incest Stories' started by عاشقة المحارم, 25/4/16.

  1. عاشقة المحارم

    عاشقة المحارم عضو متفاعل

    Messages:
    130
    Likes Received:
    68
    Trophy Points:
    28
    Gender:
    Female
    Location:
    دبي , الإمارات
    Pakistani Sex Stories waqt badal geya chudai k style badal gaee
    سیکس کے فیشن بھی وقت کے ساتھ بدل جاتے ہیں پہلے صرف کپڑے ہی فیشن ایبل ہوا کرتے تھے اور اب صرف کپڑے ہی نہیں بلکہ چوت اور لن کا استائل بھی بدل گیا ہے پرانے دور مٰں زیادہ سے زیادہ کسی کی پھدی پہ بال دیکھنے کو مل جاتے تھے اور بندہ اس تبدیلی کو انجوائے کر لیتا تھا
    اور اگلی بار اس عورت کی پھدی کے بال نہیں ہوتے تھے وہ شیو پھدی ہوتی تھی اور اس شیو پھدی کو انجوائے کر لیا جاتا تھا اور پھر تیسری بار اگر اس عورت کی پھدی پہ ہلکے بال ہوتے تھے تو ان کو انجوائے کر لیتے تھے اس طرح سے عورت کے ذہن کے مطابق مرد کے لن پہ اگر بال ہوتے تو وہ اس کو انجوائے کرتی کبھی تنا ہوا شیو لن مل جاتا تو وہ اس کو فیشن جان کے مزے کر لیتی تھی
    تب یہ نہیں ہوتا تھا کہ لن کی شیو بھی ڈیزائن والے جیسے دیگر کٹنگ اسٹائل ہوتے ہیں اور مرد نا جانے کیا کیا اسٹائل بنا کے عورتوں کی توجہ حاصل کرتے ہیں اور اب تو عورتوں کی چوت پہ بھی نتھلی ہوتی ہے ورنہ صرف ناک میں ہی ہوا کرتی تھی لیکن اب تو پھدے کے بال اتارے وقت بھی لڑکیاں اسٹائل سے اتارتی ہیں
    تاکہ مردوں کو پر کشش نظر آ سکیں اس طرح تو کبھی نہیں ہوا کرتا تھااور اب تو مرد عورت کو یا عورت مرد کو باندھ کے ایک دوسرے کے ساتھ سیکس کرتے ہیں اور نام دیتے ہیں وائلڈ سیکس کا گویا رف سیکس جنگلی ہو گیا ہے اس دور میں گانڈ چودنا لڑکوں کا لڑکی کی کام ہوا کرتا تھا لیکن اس دور میں تو عورتوں کی بھی گانڈ چودی جاتی ہے
    اور یہ بھی فیشن بن گیا ہے کای وقت بدلا ہے سیکس کے اسٹائل اب تو کپڑوں سے بھی جلدی بدل جاتے ہیں اور لڑکیاں نئے اسٹائل کے ساتھ چوت دیتی ہیں پہلے صرف مشنری پوز میں یا کبھی کبھار کوئی پڑھی لکھی سکول ٹیچر یا نرد ٹائپ کی لڑکی لن کے اوپر سواری انجوائے کرتی تھی لیکن اب تو ہر لڑکی لن پہ سواری اور دوگی پوز میں چدائی لگواتی ہے
    مزید اس دور میں کسی کو علم ہی نہیں تھا کہ انہتر کا زویہ بھی سیکس میں عام ہو جائے گااور لن چسائی بنایدی چیز ہو گی چوت چاٹنا مرد نفرت کیا کرتے تھے لیکن اب مرد سے پہلے عورت کہتی ہے فل می پسی اس کو چوسو لپس چوت کے چوس چوس کے مرد چوت کا پانی نکالتے ہیں
    ہیں کیسا فیشن آگیا ہے عورتیں پیٹ کے ساتھ زنجیر پہن کے اور مرد ٹیٹوز بدن کے ساتھ چوت انجوائے کرتے ہیں شاندار سیکس لگانے کے لیئے اب تو شی میل کا ٹرینڈ بھی بہت زور پکڑ چکا ہے اور لڑکیاں لیسبین سیکس انجوائے کرنے لگ گئی ہیں ورنہ بہت پہلے ہزاروں میں کوئی ایک لڑکی ہو گی جس کو لیسبین سیکس کا علم ہوتا تھا
    پاکستانی لڑکیاں اب وہ پہلے والی نہیں رہیں تھیں جب میں کوئی دس سال قبل پاکستان سے کینڈا گیا تھا اس وقت تو اگر میں کسی لڑکی کو چود لیتا تھا اور اگر اس بات کا شک بھی پڑ جاتا مجھے بڑے مسائل کا سامنا کرنا پرتا تھا اور اب تو اسٹائل ہی اور تھا ان دنوں جب کوئی ماڈرن لڑکی ٹائٹ جینز پہن لیتے تھی تو لڑکے اور بازار میں چلتے لوگ اس کی جینز میں پھنسی گانڈ کو ہی تکتے رہتے تھے اور ان کا بس چلتا تو گانڈ پھاڑ دیتے شرٹ کی بٹن کھول کر بوبز منہ میں بھر لیتے
    اور مجھے پاکستانی لڑکیاں بے چاری لگتیں جو نئے دور کے فیشن بھی کھل کر نہیں کر سکتی تھیں اور یہ پاکستانی لڑکیاں اپنے ارمان بس دل میں سجائے زندہ تھیں اور اب میں اتنے سالوں بعد اپنے ملک میں آیا تو دیکھ کر حیران رہ گیا لڑکیوں نے اب ہر طرح کے فیشن اپنائے ہوئے تھے ان کی گانڈ چوت بوبز اور یہاں تک کہ اتنے کھلے گلے والی قمیض پہن کر باہر نکلتیں تھیں کہ ان کے بوبز کا سائز اور نپل تک کے رنگ کا اندازہ کیا جا سکتا تھا
    اور یہ سب دیکھ کر میرا اب جلدی واپس جانے کا کوئی ارادہ نہیں تھا جس چوت کے نشیلے نشہ نے مجھے پاکستان آنے سے روکا ہوا تھا وہ مزے تو اب اس ملک میں بھی ملنے لگے تھے اور میں نے واپس جانے کی تیاری کرنے کی بجائے پاکستانی لڑکیاں چودائی کیلئے ڈھونڈنی شروع کر دیں میرے پاس کافی دولت آگئی تھی اور اکثر لڑکیاں اپنی مالی ضروریات اور عیش و عشرت کیلئے چودائی کراتیں ہیں وہ سب میری دوست بن چکیں تھیں اور میں نے باری باری سب کو چودنا تھا
    پاکستانی لڑکیاں اب میری دسترس میں تھیں اور میرا انتخاب تھا کس کی چودائی کب کرنی ہے اور میں نے ٹین ایج کی ماڈرن لڑکی کی چودائی کا فیصلہ کر لیا اور اس کو لیکر ایک بنگلہ میں چلا گیا وہ بنگلہ دور مضافات میں پر سکون جگہ پر تھا اور میں بے فکری اور سکون سے اس سکسی ماڈرن لڑکی کی چودائی کر سکتا تھا وہاں ہم نے پہلے مشترکہ شاور لیا اور دوران شاور ہی وہ میرا لنڈ چوسنے لگی مجھے بڑامزہ آیا وہ سکس کو انجوائے کرنا جانتی تھی اور وہ میرے مزاج کو جلد ہی سمجھ چکی تھی
    میں نے ننگے ہی اس کو اٹھا لیا اور لیکربیڈ روم میں آگیا اور اس کو میں نے بیڈ کی بجائے ڈریسنگ ٹیبل کے اوپر بٹھا دیا اور اس کی ٹانگیں کھول کر چوت پر لگے پانی کے قطرے چوستا رہا اور پھر اس کے ممے چوسے اس کی نکھری نکھری چوت تھی
    اور میں نے اسی پوز میں کھڑے ہو کر اس کی ٹائٹ چوت کے اوپر حساس دانے پر لنڈ رگڑا وہ بہت ہی گرم ہو گئی اور لنڈ ڈلوانے کیلئے بے تاب بھی پاکستانی لڑکیاں مجھے اسی لیے پسند ہیں گرم ہو جائیں تو ان کی بے قراری دیکھنے لائق ہوتی ہے بس پھر میرا لنڈ تھا اور اس کی چوت سکسی آوازیں خالی بنگلہ میں گونج رہیں تھیں
    Pakistani Sex Stories mae nai larkyaan nai andaz k sath chudai
     
  2. Rainooo3

    Rainooo3 عضو برونزي

    Messages:
    398
    Likes Received:
    194
    Trophy Points:
    43
    Gender:
    Male
    Location:
    Egypt
    اول مرة اعرف ان المنتدي لية في الباكستاني.. بس برافوا
     
  3. نايك عاشق المشقوق

    Messages:
    98
    Likes Received:
    18
    Trophy Points:
    8
    Gender:
    Male
    Location:
    Maroc
    Nice story but i need see pict please
     
  4. راسبوتين العرب

    Messages:
    1,827
    Likes Received:
    431
    Trophy Points:
    83
    Gender:
    Male
    Location:
    دمشق / جده
    محارم باكستاني
     
Loading...

Share This Page

  • مرحباً بكم فى محارم عربي !

    موقع محارم عربي هو أحد مجموعة مواقع شبكة Arabian.Sex للمواقع الجنسية العربية والأجنبية كما ندعوكم إلي مشاهدة مواقع أخري جنسية صديقة لنا لإكمال متعتكم وتلبية إحتياجاتكم الجنسية .

    سحاق
  • DISCLAIMER: The contents of these forums are intended to provide information only. Nothing in these forums is intended to replace competent professional advice and care. Opinions expressed here in are those of individual members writing in their private capacities only and do not necessarily reflect the views of the site owners and staff
    If you are the author or copyright holder of an image or story that has been uploaded without your consent please Contact Us to request its Removal
    Our Site Is Launched For (Sweden) Arabian Speaking Language